لڑکیاں لازمی دیکھیں

لڑکیاں لازمی دیکھیں

وہ رات کے گیارہ یا ساڑھے گیارہ بجے کا وقت ہو گا جب میری دوست عائشہ نے مجھے واٹس ایپ پر ایک ویڈیو کا لنک بھیجا میں نے جیسے ہی لنک پر کلک کہ تو ایک پخش ویڈیو والے ویب سائیٹ کھل میں میں نے جلدی سے بنا ویڈیو دیکھے ویب سائیٹ بند کر دی اور عائشہ کو میسج کیا اور پوچھا کہ یہ کیا بد تمیزی ہے شرم کرو میں ایسی بے ہودہ ویڈیو کب دیکھتیہوں تھوڑی دیر بعد اس کا دوباره میسج آیا جس میں لکھا تھا کہ تم نے ابھی تک ویڈیو پلے نہیں کی ؟ میں نے غصے سے کہا کہ نہیں مجھے ضرورت نہیں سے ننگی اور گندی ویڈیو دیکھنے کی ، تم ہی کروایسے گھٹیا کام ؛ میرا میسج پڑھ کر اس نے جواب میں لکھا کہ میری پیاری دوست لوگ تو دھڑا دھڑ دی ہی رہے ہیں جلدی سے ویڈیو دیکھ لوورنہ دوسرے میں اس کی بات سن کر پریشان ہو گئی اور میسج کر کے پو چھا کہ عائشہ پہیلیاں مت بجواؤ جلدی سے بتاؤ کیا ہے ویڈیو میں اس نےکہا کہ تمہاری ویڈیوز ہے جلدی سے دیکھ لو ، میں پریشان ہو گئی اور جلدی سے لنک اوپن کر کے دیکھنے گی تو میری آنکھوں کے سامنے اندھیرا گیا چانے لگامیں مکمل کی کھڑی ہوئی تھی لکڑی کا چھوٹا سا کمرہ تھا ایک کیمرہ میرا چہرہ دکھارہا تھا اور دوسرا کیمرا مین میری ٹانگوں کے در میان میرے پرائیویٹ حصوں کا منظر دکھارہا تھا ویڈیو کو اب تکدس ہزار سے زائد لوگ دیکھ چکے تھے میری تین ایسی ویڈیو ویب سائٹ پر موجود تھیں جو بالکل ایسی جگہ پر بنائے گئی تھیں جب میں ابتدائی جھٹکے سے نکلی تو مجھے یاد آیا کہ ابھی پانچ دن پہلے میں ایک گار منٹ شاپ پر اپنی شرٹس اور ٹراؤزر خریدنے گئی تھی وہاں کے چینج روم کے اندر بار بار میں کپڑے بدل بدل کر دیکھتی رہی تھی یہ ویڈیوزاس چینج روم کی تھیں جو انہوں نے خفیہ کیمرے سے بنائیں تھیں اور ایک مشہور فحش ویب سائٹ کو فروخت کر دی تھیں گار منٹ شاپ والوں نے کچھ ڈالر لیکر فروخت کی تھیمیں نے اپنی دوست عائشہ کو فون ملایا اور رورو کر ساری بات اس کو بتا ڈالی وہ پہلے ہی بہت پریشان تھی اور جانتی تھی کہ اس میں میرا کوئی قصور نہیں ہے میں نے صاف لفظوں میں عائشہ کو بتا دیا کہ میرے زندہ رہنے کا اب کوئی جواز نہیں ہے لیکن عائشہ نے مجھے بہت حوصلہ دیا ساری رات میں جاگتی رہی اور روتی رہی اگلیصبح عائشہ اپنی امی کو لے کر میرے گھر موجودتی انہوں نے میری ماں کو ساری بات بتائی اور میری ماں نے میرے باپ کو سارا واقعہ سنا ڈالا ؛ میرا باپ ایسی وقت قریبی تھانے گیا اور مکمل بات بتا کر گار منٹ شاپ والوں کے خلاف قانونی کاروائی کرنے کی درخواست کیے ، یہ بہت بڑا جرم تھا ساری پولیس انتظامیہ حرکت میں آ گئی اور گار منٹ شاپ پرچھاپہ مار کر ذمہ داروں کو گرفتار کر لیا دوکان سیل کر دی اور چینج روم سے خفیہ کیمرے اور در جنوں عورتوں کی ننگی ویڈیوز برآمد کر لیں ، اور ویب سائٹ والوںسے رابطہ کر کے ساری ویڈیوز ڈیلیٹ کروا دیں یا شاید ویب سائٹ سے ہٹوا دیں اس سب کے باوجود میری ذہنی حالت بہت خراب تھی میں نے خود کو نارمل کرنے میں کافی وقت لیا اور اس سارے وقت میری دوست عائشہ نے میرا بہت ساتھ دیا جس کے دیے ہوئے حوصلے کی وجہ سے آج میں دوباره نارمل زندگی گزار رہی ہوں ؛ سب بہنوںسے گزارش ہے جب بھی ایسی جگہوں پر جائیں تومر ممکن احتیاط کریں اور کپڑے اتارنے سے پہلے تسلی کر لیا کریں کہ کہیں آپ کے ویڈیو ریکارڈ تو نہیں ہو رہی ، ورنہ پچھتانے کا فائدہ بھی نہیں ہو گا

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *