12سالہ بیوی کو ہسپتال لے کر آنے والا 50 سالہ شوہر گرفتار

12سالہ بیوی کو ہسپتال لے کر آنے والا 50 سالہ شوہر گرفتار

مشرقی چین کے جیانگسو صوبے سےتعلق رکھنے والے شوہر نے پہلے دعویٰ کیا کہ اس کی بیوی کی عمر 20سال ہے مگر طبی عملے نے جب معائنے کے دوران دیکھا کہ لڑکی کم عمر ہے تو انہوں نےپولیس کو بلا لیا۔ڑکی کے ساتھ موجود اس کی ساس کا بھی یہی دعویٰ تھا کہ اس کی عمر 20 سال ہے ۔ڈاکٹروں نے جب لڑکی سے بات کرنے کی کوشش کی تو معلوم ہوا کہ اسے مینڈرین زبان نہیں آتی، اس لیے وہ ڈاکٹروں کی بات کا جواب نہیں دے سکی۔ڈاکٹروں نے جب شوہر سے لڑکی کی عمر کے بارے میں سوال کیا تو وہ اُن سے الجھ پڑا۔ شوہر کا کہنا تھا کہ وہ اپنی بیوی کو معائنے کےلیے لایا ہےاس لیے اپنا کام کرو اور دوسرے سوال نہ پوچھو۔پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکی کے پاس چینی شناختی کارڈ بھی نہیں ہے ، جس سے لگتا ہے کہ اسے جنوب مشرقی ایشیاء کے کسی ملک سے لایا گیا ہے۔پولیس کا یہ بھی خیال ہے کہ لڑکی اغواشدہ ہو سکتی ہے یا شوہر نےا سے کسی دوسرے ملک سے خرید کر اپنی دلہن بنایا ہوگا۔اس سے پہلے بھی چین کےا فراد ویت نام کی لڑکیوں کو خرید کر اُن سے شادی کر تے رہے ہیں۔چین میں لڑکیوں کےلیے شادی کی قانونی عمر 20سال اور لڑکوں کےلیے 22سال ہے۔ دیہاتی علاقوں میں لوگ اپنے بچوں کی شادی 13سال کی عمر میں بھی کر دیتےہیں مگر پھر وہ شادی کی رجسٹریشن اس وقت ہی کراتے ہیں، جب لڑکی یا لڑکا قانونی طورپر شادی کی عمر کو پہنچ جائے

Categories

Comments are closed.